Arts Council of Pakistan Karachi

آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی‎

Press Release and Updates 2023

Press Releases and Media Coverage of Arts Council of Pakistan Karachi

27th January 2023

The spectacular performance of special children stole the show at ongoing Pakistan Youth Festival in Arts Council of Pakistan Karachi.

Karachi ( ) On the fifth day of the ongoing Pakistan Youth Festival in Karachi, a special children’s festival for special children was organized in the open-air theater. The students of schools, colleges and universities participated in the Pakistan Youth Festival from the morning while the boys and girls participated in the dance workshop. Hadi Bux Kalhoro, Prof. Dr. Shagfat Shahzadi spoke, during the final results of the speech competitions, President Arts Council Muhammad Ahmed Shah said that love and fear are two emotions that drive a person forward, if you do something with open mind then the whole world will be at your feet, we can go far in the world by controlling ourselves, he said, first of all we have to become a better person, father, son and a better husband, a breath of fresh air in our mind. Give, keep your ears and eyes open too, so get the blessings from wherever you get and move forward to acquire new knowledge. Secretary Special Education Hadi Bux Kalhoro expressed his views and said that President of Arts Council Muhammad Ahmed Shah always does something different, I congratulate him on the successful festival in Pakistan Youth Festival Battle of the Bands, singing, instrument, dance and acting finals will be held on January 28, while the musical program will be performed by Komail Anam and AUJ band.

آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی میں جاری پاکستان یوتھ فیسٹیول کے پانچویں روز خصوصی بچوں کی شاندار پرفارمنس نے میلہ لوٹ لیا

محبت اور خوف انسان کو آگے بڑھاتے ہیں ،صدر آرٹس کونسل محمد احمدشاہ

خصوصی بچوں کے لیے اسپیشل چلڈرن فیسٹیول کا انعقاد خوش آئند ہے،سیکریٹری اسپیشل ایجوکیشن ہادی بخش کلہوڑو

کراچی ( ) آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی میں جاری پاکستان یوتھ فیسٹیول کے پانچویں روز خصوصی بچوں کے لیے اسپیشل چلڈرن فیسٹیول کا انعقاد اوپن ایئر تھیٹر میں کیا گیا، خصوصی بچوں کی پینٹنگ ، تقریر ، ڈانس، اداکاری اور گلوکاری نے فیسٹیول میں شرکاءکے دل جیت لیے، پاکستان یوتھ فیسٹیول میں صبح سے ہی اسکولز، کالجز اور یونیورسٹیز کے طلبہ و طالبات نے شرکت کی جبکہ لڑکے اور لڑکیوں نے ڈانس ورکشاپ میں بھرپور انداز میں حصہ لیا، پاکستان یوتھ فیسٹیول میں صدرآرٹس کونسل محمد احمد شاہ، اسپیشل ایجوکیشن کے سیکریٹری ہادی بخش کلہوڑو، پروفیسر ڈاکٹر شگفتہ شہزادی نے گفتگوکی، تقریری مقابلوں کے فائنل نتائج کے دوران صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ نے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ محبت اور خوف دو ایسے جذبے ہیں جو انسان کو آگے بڑھاتے ہیں جس دن آپ نے دماغ کی بندگراہ کو کھول لیا تو پوری دنیا آپ کے قدموں میں ہوگی، ہم خود پر قابو پاکر دنیا میں بہت آگے بڑھ سکتے ہیں، انہوں نے کہاکہ ہمیں سب سے پہلے بہتر انسان، باپ ، بیٹا اور بہترین شوہر بننا ہوگا ، اپنے دماغ میں تازہ ہوا کا جھونکا آنے دیں ، کان اور آنکھ بھی کھلے رکھیں ، ہمیں بڑے لوگوں کو فالو کرنا چاہیے مگر کسی ایک انسان کو نہیں، قائداعظم سے پاکستان اٹھا، آئن اسٹائن سے سائنس اور غالب سے شاعری تو جہاں سے جو فیض ملتا ہے وہ فیض حاصل کریں اور نئے علم کے حصول کے لیے آگے بڑھیں، اسپیشل چلڈرن فیسٹیول میں اسپیشل ایجوکیشن کے سیکریٹری ہادی بخش کلہوڑونے اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہاکہ خصوصی بچوں کے لیے اسپیشل چلڈرن فیسٹیول کا انعقاد خوش آئند ہے، صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ ہمیشہ کچھ الگ کرتے ہیں، میں کامیاب فیسٹیول پر انہیں مبارکباد پیش کرتا ہوں۔ پاکستان یوتھ فیسٹیول میں Battle of The Bands، گلوکاری، انسٹرومنٹ، ڈانس اور اداکاری کے فائنل 28جنوری کو ہوں گے جبکہ میوزیکل پروگرام میں کومیل انعم اور AUJ بینڈ پرفارم کریں گے


26th January 2023

پاکستان یوتھ فیسٹیول میں جمعہ کے روز اسپیشل چلڈرن فیسٹیول کا انعقاد کیا جائے گا

مصوری،فوٹو گرافی، مضمون نویسی، کوئز اور تقریری مقابلوں کا فائنل 27جنوری کو ہوگا

صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ کا شاندار بیٹ باکسنگ کرنے پر عبدالحادی کو 10ہزار روپے کیش انعام دینے کا اعلان

کراچی ( ) آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی کے زیر اہتمام پاکستان یوتھ فیسٹیول میں اسپیشل چلڈرن فیسٹیول کا انعقاد جمعہ کے روز کیا جائے گا جس میں مختلف اسکول اور کالجز کے بچے پینٹنگ، اداکاری، ڈانس اور گلوکاری میں اپنی مہارت دکھائیں گے جبکہ 23جنوری سے مصوری،فوٹو گرافی، مضمون نویسی، کوئز اور تقریری مقابلوں میں حصہ لینے والے امیدواروں کے نتائج کا اعلان 27جنوری کو کیا جائے گا ، شام 4بجے میوزک کانسرٹ ہوگا جس میں AUJبینڈ سمیت معروف گلوکار پرفارم کریں گے۔ پاکستان یوتھ فیسٹیول میں صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ نے شاندار بیٹ باکسنگ کرنے پر عبدالحادی کو 10ہزار روپے کیش انعام دینے کا اعلان کردیا، انہوں نے کہاکہ کراچی سمیت دیگر شہروں کے نوجوانوں پاکستان یوتھ فیسٹیول میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہے ہیں، مصوری اور فوٹو گرافی کے مقابلوں میں جیتنے والے خوش نصیبوں کو پچیس ہزار روپے کا انعام دیا جائے گا، فیسٹیول میں Battle of The Bands، تقریر، اداکاری، گلوکاری انسٹرومنٹ کے مقابلے، فوٹو گرافی اور لائیو مصوری کے دوخصوصی مقابلے جبکہ تھیٹر کی ورکشاپ بھی ہوئی۔ صبح 10بجے سے آرٹس کونسل میں اسکول، کالجز اور یونیورسٹیز کے طلبہ کے علاوہ مختلف کیٹیگریز میں حصہ لینے والے امیدواروں کا رش لگ گیا، ہر طرف نوجوان نسل فیسٹیول سے لطف اندوز ہوتے رہے جبکہ رقص کے سیمی فائنل میں مختلف ڈانس گروپ اور امیدواروں کی سولو پرفارمنس نے فیسٹیول کو چار چاند لگا دیے

A special children’s festival will be held on Friday in the Pakistan Youth Festival

The finals of painting, photography, essay writing, quiz and speech competitions will be held on January 27.

President of Arts Council Muhammad Ahmad Shah announced to award 10,000 rupees cash prize to Abdul Hadi for his excellent beat boxing.

KARACHI ( ) A special children’s festival will be organized in the Pakistan Youth Festival organized by the Arts Council of Pakistan Karachi on Friday, in which children from different schools and colleges will show their skills in painting, acting, dancing and singing, while painting will be held from January 23. The results of the candidates participating in painting, photography, essay writing, quiz and Declamation (Urdu-English) competitions from January 23 will be announced on January 27. There will be a music concert at 4pm in which famous singers including AUJ band will perform. In the Pakistan Youth Festival, President Arts Council Muhammad Ahmad Shah announced a cash prize of Rs 10,000 to Abdul Hadi for doing excellent beat boxing. He said that the youth of other cities including Karachi are actively participating in the Pakistan Youth Festival, painting Winners of the photography competitions will be awarded a prize of Rs.25,000.The festival will feature Battle of the Bands, speech, acting, singing and instrument competitions, two special competitions of photography and live painting, while a theater workshop will also be held. From 10 o’clock in the morning, there was a rush of candidates participating in various categories in addition to the students of schools, colleges and universities in the Arts Council, the young generation from all sides continued to enjoy the festival while in the semi-finals of the dance, various dance groups and solos of the candidates. The performance capped off the festival


25th January 2023

Arts Council of Pakistan Karachi announces free training for young people interested in IT. President Arts Council Karachi Muhammad Ahmad Shah.

Karachi  ( ) Pakistan Youth Festival is going on in full swing at the Arts Council of Pakistan Karachi. On the third day of the festival, bands from all over the city took part in the auditions of the Battle of the Bands Audition For 7 Different  Categorize were took place, In which Instrumentalist, Acting, Dance, Singing, Speech, Quiz and Painting Were included. On this occasion, two special contests of live painting and photography were organized, in which, 25,000 was announced for the lucky winners. Speaking at the festival, President Arts Council Muhammad Ahmad Shah said that education and training of the youth and learning modern technology are very important to make Pakistan strong and stable. Arts Council of Pakistan Karachi  will provide free IT learning facilities for the youth. He said that Pakistan is currently suffering from economic difficulties. Arts Council is announced to provide free training facility for youth. In which as many young people from wherever they belong they will be able to participate in this training program. Mohammad Ahmad Shah said that India is earning one hundred and seventy five billion dollars from IT. Pakistan’s youth are more intelligent than India’s. but unfortunately they do not get opportunities. Arts Council today announces that along with arts and other education and training, we are also providing IT learning opportunities for young people who do not have the resources to continue their education and are interested in the IT sector. After the Youth Festival, they can get registered at the Arts Council of Pakistan, Ahmed Shah Building, Ground Floor, Karachi. We will start training soon and organize training by calling international trainers. People of the city want us to contribute to the development of the country

آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی آئی ،ٹی میں دلچسپی رکھنے والے نوجوانوں کے لئے مفت ٹریننگ کا اعلان ، صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ

صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ کا آرٹس کونسل کراچی میں جاری پاکستان یوتھ فیسٹیول میں نوجوانوں سے خطاب

کراچی ( ) آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی نوجوانوں کو آئی ، ٹی کی تربیت دینے کے لئے جلدی انتظام کر رہی ہے جہاں بین القوامی سطح کے ٹرینر کی خدمات حاصل کی جائیں گی ۔ ان خیالات کا اظہار صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ نے یوتھ فیسٹیول کے تیسرے روز نوجوانوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ یوتھ فیسٹیول2023 کے تیسرے روز بھی گہما گہمی کا سلسلہ جاری رہا۔ فیسٹیول میں مختلف کالجز اور یونیورسٹیز کے طلباءو طالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی،فیسٹیول میں صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو مضبوط اور مستحکم بنانے کے لئے نوجوانوں کی تعلیم وتربیت اور جدید ٹیکنالوجی کو سیکھانا بہت ضروری ہے ۔آرٹس کونسل آف پاکستان نوجوانوں کے لئے آئی ، ٹی سیکھنے کی سہولیات مفت فراہم کرے گی انہوں نے کہا کہ پاکستان اس وقت اقتصادی مشکلات کا شکار ہے ۔ایک ایک ملین ڈالر کے لئے ہم پریشان ہیں اس صورت حال سے نکلنے کے لئے نوجوانوں پر خصوصی توجہ کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آرٹس کونسل نوجوانوں کے لئے فری ٹریننگ کی سہولت مہیا کرنے کا اعلان کیاجاتا ہے۔ جس میں جتنے نوجوان جہاں سے بھی ان کا تعلق ہو ۔ وہ اس تربیتی پروگرام میں حصہ لے سکیں گے ۔ محمد احمد شاہ نے کہا کہ بھارت آئی، ٹی سے ایک سو پچھتر بلین ڈالر کمارہا ہے ۔ہمارے پاس بھارت سے اچھے ذہین نوجوان ہیں ۔لیکن ان کو بد قسمتی سے مواقع نہیں ملتے ۔ آرٹس کونسل آج یہ اعلان کرتی ہے کہ فنون لطیفہ اور دیگر تعلیم و تربیت کے ساتھ ہم نوجوانوں کے لئے آئی ، ٹی سیکھنے کی سہولت بھی مہیا کر رہے ہیں جن نوجوان کو تعلیم جاری رکھنے کے لئے وسائل نہیں ہیں آئی ، ٹی کے شعبے میں دلچسپی رکھتے ہیں وہ یوتھ فیسٹیول کے بعد آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی احمد شاہ بلڈنگ گراونڈ فلور میں رجسٹریشن کرواسکتے ہیں ۔ہم جلد ہی ٹریننگ شروع کریں گے اور انٹر نیشنل ٹرینز کو بلا کرتربیت کا اہتمام کریں گے ۔انہوں نے مزید کہا کہ میں اور اس ملک اور شہر کے لوگ یہ چاہتے ہیں کہ ہم ملک کی ترقی میں حصہ ڈالیں اورنوجوانوں کوٹریننگ کے لئے کمپیوٹرفراہم کریں ۔ہم کوشش کریں گے کہ ان کو مفت میں کورس کروائیں ۔روز گار کمانا مشکل ہے اسلئے ہم چاہتے ہیں کہ نوجوان گھر بیٹھ کرروز گار کمانا شروع کریں ۔اس سے نوجوان اپنے گھر والوں کی کمائی میں حصہ ڈال سکتے ہیں ،گھر کو خوشحال کر سکتے ہیں ۔ اس ملک کو آگے لے جا سکتے ہیں ۔ملک کے جو مسائل ہیں ۔ اس میں نوجوان خود ہی اپنے آپ کواور اس ملک کو بھی آگے بڑھا سکتے ہیں ۔ یوتھ فیسٹیول کے تیسرے روزبھی مختلف کیٹیگریز کے مقابلے جاری رہے جن میں Battle of The Band،Instrumentalist،اداکاری، ڈانس، گلوکاری، تقریر،کوئزاور مصوری بھی شامل ہیں ، فیسٹیول میںInstrumentalistورکشاپ ،تھیٹر ورکشاپ ، ڈانس ورکشاپ ، گلوکاری ورکشاپ، تقریری ورکشاپ کا بھی انعقاد کیاگیا ۔ اس موقع پر لائیو مصوری اور فوٹو گرافی کے دو خصوصی مقابلوں کا انعقاد کیا گیا ۔جس میں جیتنے والے خوش نصیبوں کے لئے 25,25ہزار نقد رقم دینے کا اعلان کیا گیا


24th January 2023

آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی میں پاکستان یوتھ فیسٹیول زوروشور سے جاری

پلیٹ فارم مہیا کرنے پر صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ کا شکریہ ادا کرتے ہیں، فیسٹیول میں شریک نوجوان نسل کے تاثرات

کراچی ( ) آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی میں پاکستان یوتھ فیسٹیول زوروشور سے جاری ہے ، فیسٹیول کے دوسرے روز بھی مختلف کالجز اور یونیورسٹیز کے طلباءو طالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی، پاکستان یوتھ فیسٹیول میں مختلف کیٹیگریز کے مقابلے جاری رہے جن میں اداکاری، ڈانس، گلوکاری، تقریر، مضمون نویسی شامل ہیں ، تھیٹر ورکشاپ کا بھی انعقاد کیاگیا جس میں آرٹس کونسل کے مینٹورز اسد گجر، راحیل صدیقی، مظہر نورانی، اور فرحان عالم نے امیدواروں کو اداکاری کے گُر سکھائے، مقابلوں میں حصہ لینے نوجوانوں نے اتنا بڑا پلیٹ فارم مہیا کرنے پر صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ کا شکریہ ادا کیا جبکہ آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی میں فوڈکورٹ کا بھی اہتمام کیاگیا، واضح رہے کہ پاکستان یوتھ فیسٹیول 29 جنوری 2023ءتک جاری رہے گا اور مقابلے میں جیتنے والے خوش نصیب کو 2لاکھ روپے انعام دیا جائے گا

Pakistan Youth Festival continues in full swing at the Arts Council of Pakistan Karachi

Contestant thanks Arts Council`s President Mohammad Ahmad Shah for providing platform.

Karachi ( ) Arts Council of Pakistan Pakistan Karachi Youth Festival is going in full swing, on the second day of the festival, a large number of male and female students from different colleges and universities participated in the Pakistan Youth Festival. Dance, singing, speech, essay writing are included. A theater workshop was also organized in which Arts Council mentors Asad Gujjar, Raheel Siddiqui, Mazhar Noorani and Farhan Alam taught the candidates the tricks of acting. Contestant thanked President Arts Council Muhammad Ahmad Shah for providing a big platform, while a food court was also organized in Arts Council of Pakistan Karachi. A prize of Rs 2 lakh will be awarded to the lucky winner of the competition. Festival will till 29th January 2023


23rd January 2023

آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی کی جانب سے 7روزہ ”پاکستان یوتھ فیسٹیول 2023“ کا رنگا رنگ افتتاح کردیاگیا

خود راستے تلاش کریں منزلیں آپ کے سامنے ہونگیں،معروف ادیب و دانشور انور مقصود

پاکستان یوتھ فیسٹیول نوجوانوں کا ہے، آپ نے ملک کا نام روشن کرنا ہے، صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ

ہمیں مشکلات سے ڈرنا نہیں چاہیے ایک بار ٹھان لیں تو سب کرسکتے ہیں، وائس چانسلر جامعہ کراچی خالد عراقی

کراچی ( ) آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی کی جانب سے 7روزہ ”پاکستان یوتھ فیسٹیول 2023“ کا رنگا رنگ افتتاح معروف ادیب و دانشور انور مقصود نے کردیا ، اس موقع پر صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ اور جامعہ کراچی کے وائس چانسلر خالد عراقی بھی ان کے ہمراہ تھے، معروف ادیب و دانشور انور مقصود نے کہاکہ سب سے بڑا عہدہ کسی جامعہ کا وائس چانسلر ہونا ہے اس سے بڑا کوئی مقام نہیں ہوتا، آپ لوگ پاکستان کا مستقبل ہیں، خواتین پاکستان کا مستقبل ہیں جن کا صرف آدھا چہرہ نظر آتا ہے، پاکستان کے ہر شعبے میں آپ کو خواتین نظر آئیں گی، انہوں نے کہاکہ میں یہاں آپ کے لیے آیا ہوںآپ اس سرزمین کے بچے ہیں، خود راستے تلاش کریں منزلیں خود آپ کے سامنے آئیں گی، صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ کا افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کووڈ کی وجہ سے یوتھ فیسٹیول گزشتہ پانچ برسوں سے نہیں ہو سکا، پانچ سال بعد اس فیسٹیول کا انعقاد کر رہے ہیں، اس فیسٹیول میں تیس ہزار طلبا نے رجسٹریشن کرائی ہے، جامعہ کراچی جہاں سے انور مقصود،احمد شاہ،ہما میر اور بہت سی ہستیاں پاس آوٹ ہوئیں، کراچی یونیورسٹی سب کالجز کو ساتھ لے کر چلتی ہے، یہ یوتھ فیسٹیول آپ نوجوانوں کا ہے، آپ نوجونوں نے اپنا نام روشن کرنا ہے، آپ کا نام روشن ہو گا تو ملک کا نام روشن ہو گا، اس ملک نے بہت دکھ دیکھے ہیں، آپ طلبائ نے کسی چیز سے ہمت نہیں ہارنی، ملک کے حالات کو ہم بدلیں گے ، تم سب بدلو گے، جامعہ کراچی کے وائس چانسلر خالد عراقی نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہاکہ یوتھ فیسٹیول میں دعوت پر آرٹس کونسل کا بے حد شکر گزار ہوں، انور مقصود پاکستان کا بہت بڑا نام ہے، انہوں نے بتایا کہ جب میں میٹرک میں زیر تعلیم تھا تب سے انور مقصود کو سنتا اور پڑھتا آ رہا ہوں، ہم اکثر مشکلات سے ڈر جاتے ہیں جبکہ ہمیں ڈرنا نہیں چاہیے، جب آپ کچھ کرنے کی ٹھان لیں تو کر سکتے ہیں۔واضح رہے کہ آرٹس کونسل کراچی میں جاری پاکستان یوتھ فیسٹیول کے افتتاحی روز 4مختلف کیٹیگریز کے آڈیشنز منعقد کئے گئے جس میں ہزاروں طلبہ وطالبات نے حصہ لیا ۔ بقیہ 6کیٹیگریز کے مقابلے 28 تاریخ تک جاری رہیں گے ۔ جبکہ 29تاریخ کو فیسٹیول کی ا ختتامی تقریب منعقد ہوگی .افتتاحی  تقریب میں معروف گلوکار عاصم اظہر ، کشمیر بینڈ ، جیمبروز ، مصطفی بلوچ نے اپنی پرفارمنس سے میلہ لوٹ لیا

Arts council of Pakistan Karachi ‘s Pakistan youth festival  2023  kicked off with full swing

Find your own way, the destination will be in front of you, famous writer and intellectual Anwar Maqsood

Karachi ( ) Pakistan Youth Festival  2023 was grandly inaugurated by the Arts Council of Pakistan Karachi. A large number of youth participated in the Festival. Festival was inaugurated by the well-known intellectual and writer Anwar Maqsood. President of the Arts Council Muhammad Ahmad Shah and Vice-Chancellor of University of Karachi Khalid Iraqi also accompanied him, the famous writer and intellectual Anwar Maqsood said that I have come here for you, you are the children of this land, find your own way, the destinations will come before you, President of Arts Council Muhammad Ahmad Shah  While addressing the opening ceremony, he said that due to Covid, the Youth Festival could not be held for the last five years. After five years, we are organizing this festival. Thirty thousand students have registered in this festival. University of Karachi, from where Anwar Maqsood, Ahmed Shah, Huma Mir and many other personalities have passed out, you youths have to make your name bright, if your name is bright then the name of the country will be bright, this country has seen a lot of suffering, you students do not lose heart from anything, the conditions of the country We will change, you will all change, Vice Chancellor of University of Karachi, Khalid Iraqi, expressed his gratitude to the Arts Council for inviting him to the Youth Festival, he Said  Anwar Maqsood is a great name of Pakistan, he said that I have been listening and reading Anwar Maqsood since I was studying in matriculation. We often get afraid of difficulties while we should not be afraid. When you decide to do something, you can do it. On the opening day of the ongoing Pakistan Youth Festival, auditions of 4 different categories were held in which thousands of male and female students participated.   Audition  of the remaining 6 categories will continue till 28 January . While the  Closing  ceremony of the festival will be held on 29th, the famous singer Asim Azhar, Kashmir Band, Jambrooz, Mustafa Baloch stole the festival with their performances 


15 January 2023

Arts Council of Pakistan Karachi pays tribute to screen and dialogue writer and playwright Javed Siddiqui.

Karachi ( ) Arts Council of Pakistan Karachi pays tribute to screen and dialogue writer and playwright Javed Siddiqui  at  Auditorium  II  on Friday evening . In which President Arts Council   Mohammad Ahmad Shah, Famous broad caster Zia Mohiuddin , famous poetess Zehra Nigah  and  Fatima Hasan  were participated . Talking to the   event Subcontinent’s famous writer Javed Siddiqui said that I was a journalist but suddenly started writing films. I got married with the help of comrades but what happened was good that wife got very good, children are all talented but Sameer is my extension. Javed Siddiqui said that it is said on our side that the children would have divided the angels. So I wrote that what came into the heart of the angels brought me into this family like Muhammad Ali Johar, Shaukat Ali Johar my grandfather and many great people in whose company, I trained and am here before you today. said that “Dil Wale Dulhania Le Jayenge” has become my identity but I want to make my identity something else. He said that there was no thought of writing the story of the film, today I think that life does not go by our will but by the will of some other force. I was in journalism. During the emergency in India, there was a need to write the story of a film, so a film writer would write it, so my name was suggested, but I was selected in a three-minute meeting. At that time my hands and feet became cold. I wrote the dialogues and you liked them. Javed Siddiqui said that my prose is unconscious, poetry emerges from the best prose. He said that whatever  I wrote for myself. My sketches are my own story. Many people say that one should not write like this, but I think that a writer should not be small. He said that when I arrived in Delhi in 1960, the progressive movement was not so active, but with it there were great people who did not discriminate against anyone. When I got married, Sultana Apa had 700 rupees in her account, out of which she gave 600 rupees to me. All the comrades helped, thus the marriage took place in Chande, but what happened was good, the wife was very good. About his children, Javed Siddiqui said that all are talented, but Sameer is my extension. Farida Javed said that Javed is not only a writer but also a very good person, I liked him and got married, on which my brother was angry for two years. Zahra Nigah   said that when I read Javed Siddiqui’s writing, I was sure that one day I would meet him. Javed wrote a lot but people don’t forget “Dil Wale Dilhaniyale  Jayenge”.  she said that the language was inherited from Muhammad Ali Johar. There are many achievements of human beings which even death cannot annihilate, including Javed. Javed’s work is solitary work, not teamwork. she asked about “Shatranj”, how much trouble did you have to take in writing its dialogues, Zahra Nigah said that Javed Siddiqui converted the prose into poetry. In some sentences, the poetry of Ghazal is known. Prayers and blessings for him, Fatima Hasan asked about specific words in Javed Siddiqui’s prose, whether this perfection is conscious or unconscious. Speaking earlier, Zia Mohiuddin said that we have not read such prose before. Let me read a chapter from his book Langar Khana. President of Arts Council Ahmed Shah said that I wanted this great personality   of our era. The man visited the Arts Council. Today on our stage are sitting the great men of the subcontinent who are the chain of communication of a divided India. He said that the relationship of love with Javed Siddiqui cannot be described in words. He hoped that the conditions of both the countries will be good and the writers of both the countries will be able to meet with the people of these countries. Earlier, Javed Siddiqui cut the birthday cake along with wife Farida and son Sameer, niece Anaya, Zia Mohiuddin, Zahra Nigah, Fatima Hassan and Muhammad Ahmed Shah. The audience in the packed hall gave him a standing ovation and wished him a happy birthday

آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی کے زیر اہتمام اسکرین و ڈائیلاگ رائٹر و ڈرامہ نگار جاوید صدیقی کو خراج تحسین پیش کرنے کے لیے تقریب کا انعقاد

انسانوں کے بہت سارے کارنامے ایسے ہیں جسے موت بھی فنا نہیں کر سکتی ان میں جاوید بھی شامل ہیں،زہرا نگاہ

میرے خاکے میری اپنی کہانی ہیں، بہترین نثر سے نظم نکلتی ہے، معروف اسکرین و ڈائیلاگ رائٹر و مصنف جاوید صدیقی

جاوید صدیقی کے ساتھ محبت کے جو رشتے ہیں ان کو لفظوں میں بیان نہیں کر سکتے،صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ

جاوید صدیقی جیسی نثر ہمیں پہلے پڑھنے کو نہیں ملی، ضیاءمحی الدین

کراچی( ) برصغیر کے نامور ادیب جاوید صدیقی نے کہا کہ میں تو صحافی تھا لیکن اچانک فلمیں لکھنے لگا۔ میری شادی کامریڈوں کے چندہ سے ہوئی لیکن جو ہوا اچھا ہوا کہ بیگم بہت اچھی مل گئی بچے سارے باصلاحیت ہیں لیکن سمیر میری ایکسٹینشن ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کو آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی میں انہیں خراجِ تحسین پیش کرنے لیے منعقدہ تقریب سے کیا۔ اس موقع پر زہرا نگاہ، ضیاءمحی الدین، فاطمہ حسن اور صدرآرٹس کونسل محمد احمد شاہ نے بھی گفتگو کی۔ جاوید صدیقی نے کہا کہ ہماری طرف کہا جاتا ہے کہ بچے فرشتے تقسیم کر دیتے۔ اس لیے میں نے لکھا کہ فرشتوں کے دل میں کیا آئی مجھے اس گھرانے میں پیدا کیا جیسے محمد علی جوہر، شوکت علی جوہر میرے دادا اور کئی بڑے لوگ جن کی صحبت میں، میں نے تربیت حاصل کی اور آج آپ کے سامنے ہوں۔ انہوں نے کہا کہ ”دل والے دلہنیا لے جائیں گے“ میری شناخت بن گئی ہے لیکن میں اپنی شناخت کچھ اور بنانا چاہتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ فلم کی کہانی لکھنے کا سوچا بھی نہیں تھا، آج سوچتا ہوں کہ زندگی ہماری مرضی پر نہیں بلکہ کسی اور قوت کی مرضی سے چلتی ہے۔ میں صحافت میں تھا۔ بھارت میں ایمرجنسی کے دوران ضرورت پڑی کہ ایک فلم کی کہانی لکھنی ہے وہ لکھے گا جو فلمی لکھاری ہو، تو میرے نام کی تجویز ہوئی لیکن تین منٹ کی ملاقات میں میرا انتخاب ہو گیا۔ اس وقت میرے ہاتھ پاﺅں ٹھنڈے ہو گئے۔ میں نے ڈائیلاگ لکھے اور آپ کو پسند آئے۔ جاوید صدیقی نے کہا کہ میرے نثر غیر شعوری ہیں، بہترین نثر سے نظم نکلتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں نے جو کچھ بھی لکھا وہ میں نے اپنے لیے لکھا۔ میرے خاکے میری اپنی کہانی ہے۔ بہت سارے لوگ کہتے ہیں کہ ایسا نہیں لکھنا چاہیے لیکن میں سمجھتا ہو کہ لکھنے والے کو چھوٹا نہیں ہونا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ 1960ءمیں جب میں دلی پہنچا تو ترقی پسند تحریک اتنی متحرک نہیں تھی لیکن اس کے ساتھ لوگ بہت بڑے تھے جو کسی میں امتیاز نہیں کرتے تھے۔ جب میری شادی ہوئی تو سلطانہ آپا کے اکاو ¿نٹ میں 7 سو روپے تھے جس میں سے 6سو روپے مجھے دے دیئے۔ سارے کامریڈ نے مدد کی اس طرح چندے میں شادی ہو گئی لیکن جو ہوا اچھا ہوا، بیوی بہت اچھی ملی۔ اپنے بچوں کے بارے میں جاوید صدیقی نے کہاکہ سب باصلاحیت ہیں تاہم سمیر میری ایکسٹینشن ہیں۔ فریدہ جاوید نے کہا کہ جاوید لکھاری ہی نہیں بہت اچھا انسان بھی ہیں، میں نے ان کو پسند کیا اور شادی ہوئی جس پر میرے بھائی دو سال تک ناراض رہے۔ زہرا نگاہ نے کہا کہ جب میں نے جاوید صدیقی کی تحریر پڑھی تو یقین تھا کہ ایک دن ان سے ملاقات ضرور ہو گی۔ جاوید نے بہت لکھا لیکن ”دل والے دلہنیالے جائیں گے“ لوگ نہیں بھولتے۔ انہوں نے کہا کہ زبان تو ان کو ورثہ میں ملی محمد علی جوہر سے تعلق تھا۔ انسانوں کے بہت سارے کارنامے ہیں جن کو موت بھی فنا نہیں کر سکتی ان میں جاوید بھی شامل ہیں۔ جاوید کا کام تنہا کام ہے ٹیم ورک نہیں۔ انہوں نے ”شطرنج“ کے بارے میں سوال کیا کہ اس کے ڈائیلاگ لکھنے میں آپ کو کتنی تکلیف اٹھانی پڑی، زہرا نگاہ نے کہاکہ جاوید صدیقی نے نثر کو نظم میں ڈھال دیا۔ بعض جملوں میں غزل کا شعر معلوم ہوتا ہے۔ ان کے لیے دعا بھی اور مبارک بھی، فاطمہ حسن نے جاوید صدیقی کی نثر میں سے مخصوص الفاظ کے بارے میں سوال کیا کہ یہ کمال شعوری ہے یا غیر شعوری۔ضیاءمحی الدین نے جاوید صدیقی کے خاکوں کی مخصوص انداز میں پڑھنت کی۔ اس سے قبل گفتگو کرتے ہوئے ضیاءمحی الدین نے کہا کہ ایسی نثر ہمیں پہلے پڑھنے کو نہیں ملی۔ان کی کتاب لنگر خانہ سے ایک باب پڑھ کر سناتا ہوں۔صدر آرٹس کونسل احمد شاہ نے کہا کہ میں چاہتا تھا کہ ہمارے عہد کا یہ بڑا آدمی آرٹس کونسل تشریف لائے۔ آج ہمارے اسٹیج پر برصغیر کے بڑے لوگ بیٹھے ہیں جو منقسم ہندوستان کے رابطہ کی زنجیر ہیں۔ انہوں نے کہاکہ جاوید صدیقی کے ساتھ محبت کے جو رشتے ہیں ان کو لفظوں میں بیان نہیں کر سکتے۔ انہوں نے امید کی کہ دونوں ممالک کے حالات اچھے ہوں گے اور دونوں ممالک کے ادیب ان ملکوں کے عوام کے ساتھ مل سکیں گے۔ اس سے قبل جاوید صدیقی نے بیگم فریدہ اور صاحبزادے سمیر، بھتیجی عنایہ ، ضیاءمحی الدین، زہرا نگاہ ،فاطمہ حسن اور محمد احمد شاہ کے ہمراہ سالگرہ کا کیک کاٹا۔ کچھا کھچ بھرے ہال میں سامعین نے کھڑے ہوکر تالیوں بجا ئیںاور ان کو سالگرہ کی مبارکباد دی


12 January 2023

کراچی () آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی کے زیر اہتمام معروف اسکرین و ڈائیلاگ رائٹر اور ڈرامہ نگار جاوید صدیقی کو خراجِ تحسین پیش کرنے لیے جمعہ 13جنوری 2023ءکو ساڑھے 6بجے تقریب کا انعقادآڈیٹوریم II میں کیا جائے گا، جس میں معروف صدا کار و ہدایت کار ضیاءمحی الدین پڑھنت کریں گے جبکہ معروف ادیب و مزاح نگار انور مقصود، زہرا نگاہ، ادیب اسد محمد خان، صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ اظہارِ خیال کریں گے۔ جبکہ تقریب میں جاوید صدیقی کی سالگرہ کا کیک بھی کاٹا جائے گا۔


Arts Council of Pakistan Karachi organized a dance workshop for the dance lovers by renowned classical dancer “Suhaee Abro “

Karachi ( ) Arts Council of Pakistan Karachi organized a”Dance Workshop” at Studio II for classical and contemporary dance enthusiasts. The trainer   of the dance workshop was renowned classical dancer “Suhaee Abro “. Suhaee Abro taught the participants of the workshop the basic rhymes and Techniques related to classical and contemporary dance. A large number of young people participated in the workshop. On this occasion, the teachers of Dance Academy of Arts Council Karachi Mani Chao and Abdul Ghani were also present. It should be noted that new admission in dance classes are being started again in Arts Council Karachi. The admission date of to dance and theater classes has been extended till January 17


آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی کی جانب سے رقص کے دلدادہ افراد کے لئے معروف کلاسیکل ڈانسر “سوہائی ابڑو “کی ڈانس ورکشاپ کا اہتمام کیا گیا

کراچی (  ) کلاسیکل اور کنٹیمپری ڈانس کے دلدادہ افراد کے لئے آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی کی جانب سے “ڈانس ورکشاپ “کا انعقاد اسٹوڈیو IIمیں کیا گیا ۔ ڈانس ورکشاپ کی ٹرینر معروف کلاسیکل ڈانسر “سوہائی ابڑو “تھی۔ سوہائی ابڑو نے ورکشاپ کے شرکاءکو کلاسیکل و کنٹیمپری رقص سے متعلق بنیادی رموزواقاف سیکھائے ۔ ورکشاپ میں نوجوان نسل کی بڑی تعداد نے حصہ لیا ۔ اس موقع پر آرٹس کونسل کراچی کی ڈانس اکیڈمی کے اساتذہ مانی چاو اور عبدالغنی بھی موجود تھے واضح رہے کہ آرٹس کونسل کراچی میں ڈانس کلاسز کے نئے داخلوں کا آغاز ہو گیا ہے ۔ ڈانس اور تھیٹرکی کلاسز میں داخلے کے تاریخ17جنوری تک بڑھا دی گئی ہے


The 4th Tilism Theater and Dance Festival was grandly inaugurated with the joint cooperation of Arts Council of Pakistan Karachi and Tehrik-e-Niswan.

The festival will continue till 22 January 2023 at Arts Council Karachi

KARACHI ( ) The 4th  17-day Tilism Theater and Dance Festival was grandly inaugurated with the classical performance of well-known classical dancer Sohai Abro, in conjunction with the completion of 45 years of Tehrik-e-Niswan, with the joint cooperation of Arts Council of Pakistan Karachi and Tehrik-e-Niswan. Sheema karmani  presented a great classical dance along with her dance group. Romana Hussain performed the duties of the moderator in the event. The founder of Tehrik-e-Niswan Sheema Karmani said that the journey of Tehrik-e-Niswan is continuing with the hard work of the last forty-five years, we have struggled to convince ourselves. today we are celebrating as the day of our being, I thank Arts Council of Pakistan Karachi who gave the opportunity to organize this festival, theater, dance, music, debates on daily basis in the festival. And games will be presented, the festival will continue till 22nd January 2023 while performances will be presented daily at 7:30 pm, the festival is free for all citizens but children under twelve years of age cannot participate in the festival. It is to be noted that many of the plays presented at the 4Tilism Festival have been significant in the history of theater and dance in Pakistan, while the Mohenjo-daro Puppet Show was a highlight of the festival. It should be noted that many of the plays presented at the 4th Tilism Festival have been significant in the history of theater and dance in Pakistan, including the presentation of the Urdu version of “Light in the Village”, originally written by Scottish playwright “Jo Clifford” wrote who is coming from UK to attend the festival. She will be the keynote speaker at the conference “Building a Theater of Love” on Monday 9 January, followed by 2 performances of her play “Gaon Me Roshni” on Tuesday 10 and Wednesday 11 January, the highlight of the festival being the new production “Andrasbha”. Premiere, it is a delightfully romantic dance and music extravaganza with exquisite costumes, sets and lights, festival comedy drama “Bahrupiya”, historical play “Jinnay Lahore Nahin Vekhya”, Sufi poet, dancer, saint Bhagat Kanwar Ram. Including the story and to mark 100 years of the discovery of Mohenjo-daro, the spectacular dance drama “Mohen-jo-daro” will be presented. The performance integrates dialogue and narrative with dance and music, traditional storytelling techniques and the conventions of sub continental traditions and genres. The movement produced videos, documentaries, serials and music videos, organized seminars and conferences and organized residential youth conventions for cultural appreciation.


آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی اور تحریک نسواں کے مشترکہ تعاون سے چوتھا طلسم تھیٹر اینڈ ڈانس فیسٹیول کا شاندار افتتاح کردیاگیا

چوتھے طلسم تھیٹر اینڈ ڈانس فیسٹیول میں معروف کلاسیکل ڈانسر شیماکرمانی اور سوہائی ابڑو کی شاندار کلاسیکل پرفارمنس

فیسٹیول 22جنوری 2023ءتک آرٹس کونسل کراچی میں جاری رہے گا

کراچی ( )آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی اور تحریک نسواں کے مشترکہ تعاون سے تحریک نسواں کے 45سال مکمل ہونے کی مناسبت سے چوتھے 17روزہ طلسم تھیٹر اینڈ ڈانس فیسٹیول کا شاندار افتتاح معروف کلاسیکل ڈانسر سوہائی ابڑو کی کلاسیکل پرفارمنس سے ہوا ، فیسٹیول میں شیما کرمانی نے اپنے ڈانس گروپ کے ہمراہ زبردست کلاسیکل رقص پیش کیا۔تقریب میں نظامت کے فرائض رومانہ حسین نے انجام دیے ۔بانی تحریک نسواں شیما کرمانی نے کہاکہ گزشتہ پینتالیس برس کی محنت سے تحریک نسواں کا سفر جاری ہے، ہم نے خود کو منوانے کے لیےبڑی جدوجہد کی ہے ، آج کا دن ہم اپنے ہونے کے دن کے طور پر منا رہے ہیں، آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی کا شکریہ ادا کرتی ہوں جنہوں نے یہ فیسٹیول سجانے کا موقع دیا، فیسٹیول میں روزانہ کی بنیاد پر تھیٹر، ڈانس، موسیقی، مباحثے اور کھیل پیش کیے جائیں گے، فیسٹیول 22جنوری 2023ءتک جاری رہے گا جبکہ روزانہ ساڑھے سات بجے پرفارمنس پیش کی جائے گی، فیسٹیول تمام شہریوں کے لیے فری ہے جبکہ بارہ سال سے کم عمر بچے فیسٹیول میں شرکت نہیں کر سکتے۔ واضح رہے کہ 4Tilism فیسٹیول میں پیش کیے جانے والے بہت سے ڈرامے پاکستان میں تھیٹر اور رقص کی تاریخ میں نمایاں رہے ہیں، جبکہ فیسٹیول میں موہنجوداڑو کا پیپٹ شو توجہ کا مرکز بنا رہا۔ فیسٹیول میں ”لائٹ اِن دی ولیج“ کے اردو ورژن کی پیشکش بھی شامل ہے، جو اصل میں اسکاٹش ڈرامہ نگار ”جو کلفورڈ“ نے لکھا ہے جوکہ برطانیہ سے فیسٹیول میں شرکت کے لیے آرہی ہیں۔ وہ پیر 9جنوری کو منعقد ہونے والی کانفرنس ”بلڈنگ اے تھیٹر آف لو“ میں مرکزی مقرر ہوں گی جس کے بعد منگل 10اور بدھ11جنوری کو اپنے ڈرامے ”گاﺅں میں روشنی“ کی 2 پرفارمنس ہوں گی، فیسٹیول کی خاص بات نئی پروڈکشن ”اندرسبھا“ کا پریمییئر ہے، یہ شاندار ملبوسات، سیٹس اور روشنیوں کے ساتھ ایک لذت آمیز رومانوی رقص اور موسیقی کا اسراف ہے، فیسٹیول میں مزاحیہ ڈرامہ ”بہروپیا“، تاریخی کھیل ”جنے لاہور نہیں ویکھا“، صوفی شاعر، رقاص، سنت بھگت کنور رام کی کہانی بھی شامل ہے اور موہنجوداڑو کی دریافت کے 100سال مکمل ہونے پر شاندار ڈانس ڈرامہ ”موہنجوداڑو“ بھی پیش کیاجائے گا، تحریک نے 200 سے زیادہ فنکارانہ اور سماجی طور پر متعلقہ پروڈکشنز مختلف شکلوں اور انداز میں تیار کی ہیں۔ پرفارمنس ڈانس اور موسیقی، روایتی کہانی سنانے کی تکنیک اور برصغیر کی روایات اور انواع کے کنونشن کے ساتھ مکالمے اور بیانیہ کو مربوط کرتی ہے۔ تحریک نے ویڈیوز، دستاویزی فلمیں، سیریل اور میوزک ویڈیوز بنائے، سیمینارز اور کانفرنسیں منعقد کیں اور ثقافتی تعریف کے لیے رہائشی یوتھ کنونشنز کا انعقاد کیا


3 January 2023

کراچی ( ) آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی اور تحریک نسواں کے مشترکہ تعاون سے تحریک نسواں کے قیام کے 45سال مکمل ہونے پر ”چوتھا طلسم تھیٹر اینڈ ڈانس فیسٹیول“ سے متعلق پریس کانفرنس بدھ 4جنوری 2023ءکو دوپہر ایک بجے آرٹس کونسل کراچی کے آڈیٹوریم I میں ہوگی جس میں صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ، سماجی کارکن و بانی تحریک نسواں شیماکرمانی اور انور جعفری بریفنگ دیں گے۔